انٹر نیشنل

لیبیا میں حالات نہایت کشیدہ

طرابلس: لیبیا کے دارالحکومت کی جیل سے مقتول صدر معمر قذافی کے حامی سیکڑوں قیدی فرار ہو گئے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق لیبیا میں حالا ت روز بروز بگڑتے جا رہے ہیں، فورسز اور باٰٰغیوں کے درمیان جھڑپوں سے ہلاکتوں کی تعداد میں بھی اضا فہ ہوتا جارہا ہے-

گزشتہ روز بھی پولیس اور قیدیوں میں جھڑپوں کے دوران 400 سے زائد قیدی جیل توڑ کے فرار ہوگئے-جیل انتظامیہ کا کہنا ہے کہ شہر میں اپنے ساتھیوں کے قتل عام کا سن کے 5 سو سے زائد ملزمان نے جیل میں ہنگامہ آرائی اور توڑ پھوڑ کی۔ بعد ازاں مشتعل قیدی جیل کے مرکزی دروازے کو توڑ کر فرار ہو گئے۔ مرکزی دروازے پر تعینات محافظوں نے اپنی جانیں بچانے کے لیے قیدیوں کو نہیں روکا۔

واضح رہے کہ 27 جولائی 2013 میں بھی لیبیا کی ایک جیل سے ایک ہزار سے زائد خطرناک قیدی فرار ہو گئے تھے۔ لیبیا میں 41 سال تک بلا شرکت غیرے حکومت کرنے والے معمر قذافی کو 2011 میں خانہ جنگی کے دوران قتل کر دیا گیا تھا تاہم معمر قذافی کے حامیوں اور حکومت کے درمیان جھڑپوں کا سلسلہ تاحال جاری ہے۔

 

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close