پاکستان

علی رضا عابدی پر قاتلانہ حملہ کس نے کیا ؟ پولیس نے قاتلوں کی بے نقاب کردیا

کراچی : ایم کیو ایم کے سابق رہنما علی رضا عابدی کو گذشتہ رات دو نامعلوم افراد نے فائرنگ کر کے قتل کردیا۔ جس کے بعد پولیس نے علی رضا عابدی کی ٹارگٹ کلنگ کے حوالے سے تحقیقات کا آغاز کر دیا۔ پولیس نے اس واقعہ میں ملوث افراد کے بارے میں اہم شواہد حاصل کر لیے ہیں۔ قومی اخبار میں شائع ایک رپورٹ کے مطابق کراچی میں پاک سر زمین پارٹی کے دفتر پر حملے کے بعد علی رضا عابدی کے قتل کے حوالے سے ابتدائی پیش رفت میں دونوں واقعات میں تین مختلف گروپوں کے ملوث ہونے کے حوالے سے اداروں کو اہم شواہد موصول ہوئے ہیں۔

با وثوق ذرائع کے مطابق سندھ کے اندر سیاسی رہنمائوں کی ٹارگٹ کلنگ میں الطاف حسین گروپ ، ایک غیر ملکی خفیہ ایجنسی اور ایک ٹارگٹ کلرز کے ملوث ہونے کے شواہد ملے ہیں ۔

الطاف حسین غیر ملکی ایجنسی کی مدد سے کراچی کے اندر ٹارگٹ کلنگ اور خوف کی فضا پیدا کرنے میں ملوث ہے ۔ اداروں کو ملنے والی ر پورٹ میں بتایا گیا کہ بلوچستان ، خیبرپختونخواہ اور پنجاب میں ناکامی کے بعد غیر ملکی خفیہ ایجنسیوں نے الطاف حسین اور ایک ٹارگٹ کلر گروپ کے ذریعے کراچی کے اندر دوبارہ سے خوف کی فضا پیدا کرنے اور وہاں فسادات برپا کرنے کے لیے اس سب کا آغاز کیا ہے۔

چند روز قبل الطاف حسین نے اپنے ایک ویڈیو بیان میں بھی نہ صرف اس بات کا اشارہ دیا تھا بلکہ اپنے افراد کو اس کا حکم بھی جاری کیا تھا ۔ بھارتی خفیہ ایجنسی ’’را‘‘ کے الطاف حسین اور پاکستان میں دیگر جرائم پیشہ گروہوں کے ساتھ نہ صرف رابطے ہیں بلکہ بھارتی خفیہ ایجنسی کی جانب سے ان لوگوں کو فنڈنگ بھی کی جاتی ہے۔ اور شُبہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ ان کے ذریعے ہی علی رضا عابدی پر یہ کام کروایا گیا ۔ ذرائع کے مطابق اہم ادارے اس حوالے سے پہلے ہی الرٹ جاری کر چکے تھے کہ کسی بھی وقت یہ گھنائونا کھیل شروع ہو سکتا ہے ۔

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close