پاکستان

نواز شریف کے فیصلے سے قبل ہی احسن اقبال نے ایسا بیان دے دیا کہ ملکی سیاست میں کہرام مچ گیا

اسلام آباد : سابق وزیر داخلہ احسن اقبال اپنے قائد نواز شریف کا فیصلہ آنے سے قبل ہی پھٹ پڑے۔پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال نے کہا ہے کہ شریف خاندان کے لندن میں 2 فلیٹس حرام اور پی ٹی آئی لیڈروں کے 5,5 فلیٹس بھی حلال ہیں۔احسن اقبال نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ شریف خاندان جو نواز شریف کی سیاست میں آمد سے قبل ملک کے ٹاپ بزنس گروپس میں سے ایک تھا اور اس کے دو لندن فلیٹس حرام اور پی ٹی آئی لیڈروں اور وزراء کی آفشور کمپنیاں اور لندن میں 5,5 فلیٹس جن کا نہ اتا معلوم ہے اور نہ پتہ معلوم ہے وہ حلال ہیں،کیا یہ انصاف ہے زرا سوچئیے؟۔

انہوں نے ایک اور ٹویٹ میں کہا کہ نواز شریف کا 9 سال مشرف نے احتساب کیا 2 سال سے پاناما کے نام پر کڑا احتساب ہو رہا ہے -مجھے خوشی ہے کہ ہمارے لیڈر کیخلاف سرکار کے کاروبار میں 1 پیسے کی کرپشن کا کوئی کیس نہیں-مرحوم والد کے کاروبار پر نام نہاد احتساب ہو رہا ہے- نواز شریف کا قصور عوامی مینڈیٹ سے کرپشن پر آواز اٹھائی۔

جب کہ دوسری طرف سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ عدالت میں نامعلوم افراد موجود ہیں اور جج صاحب بھی فیصلہ سننے آئے ہیں. احتساب عدالت کے باہر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ انصاف کا ماحول عدالت میں نہیں ہے‘ عدالت کے دروازے بند ہیں معلوم ہوتا ہے کہ انصاف کے دروازے بھی بند ہیںلکھا ہوا فیصلہ پڑھنے میں کیا دقت ہے؟ . شاہدخاقان عباسی نے کہا کہ وکلاء‘صحافیوں اور سیاسی راہنماﺅں کو عدالت میں داخل نہیں ہونے دیا جارہا عدالت کے اندر نامعلوم افراد موجود ہیں ‘محفوظ کیا گیا فیصلہ سنانے میں کیا رکاوٹ ہے. سابق ڈپٹی سپیکر مرتضی جاوید عباسی نے کہا کہ ان کی اطلاع کے مطابق جج صاحب بیس دن سے گھر نہیں گئے عدالت پر حساس اداروں کے اہلکار قابض ہیں اور جج کو یرغمال بنایا گیا ہے.

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close