پاکستان

زرداری کے گرفتاری کے بعد کیا ہوگا ؟ زرداری نہ کہتے ہوئے بھی بہت کچھ کہ گئے

کراچی : سندھ میگا منی لانڈرنگ اسکینڈل کی سماعت کے لیے سابق صدر اور پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین آصف علی زرداری اپنی ہمشیرہ فریال تالپور کے ہمراہ کراچی کی بینکینگ کورٹ پہنچے تو صحافیوں نے آصف علی زرداری سے سوال کیا کہ کہا جارہا ہے کہ آج آپ گرفتار ہوجائیں گے، بتائیے کہ آہ کی گرفتاری سب سے زیادہ کس پر بھاری پڑے گی؟ صحافیوں کے سوالات پر جواب دینے کی بجائے سابق صدر آصف علی زرداری مُسکراتے رہے اور عدالت کے اندر داخل ہو گئے جس کے بعد ان کی ضمانت میں توسیع ہو گئی۔

یاد رہے کہ آج صبح منی لانڈرنگ کیس میں پاکستان پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری اور ان کی بہن فریال تالپور آج بینکنگ کورٹ میں پیش ہوئے۔

بینکنگ کورٹ میں میگا منی لانڈرنگ کیس کی سماعت ہوئی۔ جیالوں کی جانب سے کمرہ عدالت میں نعرے بھی لگائے گئے۔ بینکنگ کورٹ نے سابق صدر آصف علی زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور کی ضمانت میں 7 جنوری تک توسیع کردی۔

سابق صدر آصف علی زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور کی پیشی کے موقع پر بینکنگ کورٹ کے باہر سکیورٹی کے سخت ترین انتظامات کیے گئے تھے۔ دوسری جانب گذشتہ روز الیکشن کمیشن سندھ میں پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری کی نا اہلی کے لیے پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے ایک درخواست جمع کروائی گئی تھی لیکن الیکشن کمیشن نے درخواست لینے سے انکار کردیا تھا اور ہدایت کی تھی کہ الیکشن کمیشن اسلام آباد آفس سے رابطہ کیا جائے۔

الیکشن کمیشن سندھ کے حکام نے کہا کہ آصف زرداری رکن قومی اسمبلی ہیں لہذا آصف زرداری کیخلاف درخواست ہمارے دائرہ اختیار میں نہیں آتی۔ تاہم خرم شیر زمان نے مطالبہ کیا کہ تحریری طور پر بتائیں کہ آپ درخواست وصول نہیں کر سکتے، جس پر درخواست وصول کر لی گئی۔

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close