پاکستان

سپریم کورٹ نے نوازشریف کیس کا فیصلہ سنادیا

اسلام آباد: سپریم کورٹ آف پاکستان نے پاکپتن اراضی کیس میں ہومیو پیتھک فیصلہ سناتے ہوئے جے آئی ٹی تشکیل دیدی ہے جس کی سربراہی ڈی جی نیکٹا خالق داد لک کریں گے جبکہ اس میں آئی ایس آئی اور آئی بی کے نمائندے بھی شامل ہوں گے۔ 

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے پاکپتن اراضی کیس کی سماعت کی جس دوران نوازشریف کے وکیل،محکمہ اوقاف کے حکام اور دیگر عدالت میں پیش ہوئے۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ دستاویزات سے ثابت ہے نوازشریف نے بطوروزیراعلیٰ اوقاف جائیدادنجی ملکیت میں دی۔ نوازشریف کہتے ہیں ان کی یادداشت ہی چلی گئی ہے،چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ کس سے تفتیش کرائیں؟وکیل نوازشریف نے کہا کہ کسی سے بھی تفتیش کرا لی جائے،چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ نوازشریف کہتے ہیں اراضی ڈی نوٹیفائی نہیں کی،آپ جانتے ہیں یہ بات غلط ثابت ہوگئی تونتائج کیاہوں گے؟۔

عدالت نے پاکپتن اراضی کیس میں جے آئی ٹی تشکیل دیدی جس کی سربراہی ڈی جی نیکٹا خالق دادلک کریں گے جبکہ اس میں آئی ایس آئی اور آئی بی کے نمائندے بھی شامل ہوں گے۔ جے آئی ٹی کے قواعدوضوابط 27 دسمبرتک طے کئے جائیں اور عدالتی حکم کے مطابق 27 دسمبرکوجے آئی ٹی ارکان سپریم کورٹ میں پیش ہوں گے۔

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close