پاکستان

وزیر مملکت شہریار آفریدی کے مفرور بہنوئی نے اچانک بڑا قدم اٹھالیا، حیرت انگیز خبر

کوہاٹ :وزیر مملکت داخلہ شہریار آفریدی کے بہنوئی نے قتل کے الزام میں 21 سال مفرور رہنے کے بعدسیشن عدالت سے ضمانت قبل از گرفتاری حاصل کرلی۔

کوہاٹ میں 21 سال سے مفرور قتل کے ملزم احمد نثار وزیر مملکت داخلہ شہریار آفریدی کا بہنوئی ہے اور اس پر الزام ہے کہ اس نے جائیداد کے تنازع پر جرگہ کے دوران اپنے رشتہ دار کیپٹن محمد یونس کو قتل کیا تھا۔

پولیس کے مطابق ملزم احمد نثار نے 1997 میں کیپٹن محمد یونس کو قتل کیا تھا اور اس واقعے کا مقدمہ مقتول کی بیوہ نگہت آفریدی کی مدعیت میں تھانہ سٹی میں درج کیا گیا تھا جس کے بعد سے ملزم مفرور تھا۔
ضرور پڑھیں: قصورمیں عدلیہ مخالف ریلی نکالنے کامعاملہ،لیگی ایم پی اے نعیم صفدر کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم

ملزم نے گزشتہ روز سیشن عدالت سے ضمانت قبل از گرفتاری حاصل کرلی ہے۔ عدالت نے ملزم کو 8 دسمبر تک ضمانت قبل ازگرفتاری کی متعلقہ عدالت سے توثیق کرانے کی ہدایت کی ہے۔واضح رہے کہ مقتول کیپٹن محمدیونس کی بیوہ نگہت آفریدی نے سوشل میڈیا پرقتل سے متعلق بیان بھی دیا تھا۔

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close