پاکستان

چینی قونصلیٹ پر حملہ۔۔بھارت کا مکروہ چہرہ بے نقاب، کلبھوشن یادیو نے بڑا انکشاف کردیا

بھارت پاک چین تعلقات کو خراب اور سی پیک منصوبے کو نقصان پہنچانا چاہتا ہے کلبھوشن یادیو کا اہم بیان سامنے آگیا-

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کے مطابق بلوچ علیحدگی پسند تنظیم ”بلوچ لبریشن آرمی” کے ترجمان نے فون پر حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے بی بی سی کو بتایا کہ ان کے تین ارکان اس کارروائی میں شامل ہیں اور یہ چین کے لیے ایک تنبیہ ہے۔

یہ تو آپ سب کو معلوم ہوگا کہ آج صبح چینی قونصلیٹ پر 3 دیشتگردوں نے اچانک حملہ کردیا جسے پولیس اہلکاورں نے اپنء جان پر کھیل کرناکام بنایا اور کچھ ہی دیر بعد حملے کے ذمہ داری بلوچ علیحدگی پسند تنظیم ”بلوچ لبریشن آرمی” نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کی ۔

علیحدگی پسند تنظیم بلوچ لبریشن آرمی کے ایک ترجمان جیہاند بلوچ نے فون پر حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے بی بی سی کو بتایا کہ ان کے مجید بریگیڈ کے تین فدائین اس کارروائی میں شامل تھے۔

انہوں نے کہا کہ یہ چین کے لیے ایک تنبیہہ ہے کہ وہ ہماری زمین پر قبضے کی کوشش چھوڑ دے ورنہ مستقبل میں اسے مزید سنگین معاملات کا سامنا کرنا پڑے گا۔ بلوچ لبریشن آرمی کی جانب سے حملے کی ذمہ داری قبول کرنے کے تانے بانے بھارت سے بھی ملتے ہیں۔

بھارت پاک چین تعلقات کو خراب کرنے کے ساتھ ساتھ پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے کو بھی نقصان پہنچانا چاہتا ہے۔ واضح رہے کہ بھارت کے جاسوس کلبھوشن یادیو نے اپنے اعترافی بیان میں ”بلوچ لبریشن آرمی” (بی ایل اے) کو بھارتی فنڈنگ کا انکشاف کیا تھا اور اعتراف کیا تھاکہ یہ تنظیم بھارت کی ایما پر پاکستان میں کارروائیاں کرتی ہے۔ کلبھوشن یادیو کے اسی بیان کی بنیاد پر آج صبح چینی قونصلیٹ پر ہونے والے حملے میں بھارت کے ملوث ہونے کا شُبہ ظاہر کیا جا رہا ہے البتہ اس حوالے سے تحقیقات جاری ہیں جس کے بعد ہی کوئی حتمی بیان جاری کیا جائے گا۔

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close