پاکستان

کاشف سے شادی کرنے والی امریکی خاتون کون ہے اور کیا خطرناک کام کرتی ہے ؟سنسنی خیز خبر

اسلام آباد: امریکی خاتون انسانی اسمگلر ہے اور کاشف کے ساتھ اسکی شادی بھی معاہدے کے تحت ہے جو کاشف کے امریکہ پہنچتے ہی ختم ہو جائے گا-

پاکستان کی محبت میں گرفتار امریکی خاتون کے متعلق روزنامہ اوصاف نے انکشاف کیا ہے کہ مریکی خاتون انسانی اسمگلر ہے اور کاشف کے ساتھ اسکی شادی بھی معاہدے کے تحت ہے جو کاشف کے امریکہ پہنچتے ہی ختم ہو جائے گا۔تفصیلات کے مطابق 41 سالہ امریکی خاتون نے 21 سالہ پاکستانی لڑکے ملاقات کے لیے طویل سفر طے کیا اور پاکستان کے شہر سیالکوٹ پہنچ گئی۔

امریکی خاتون اور کاشف کے درمیان دوستی سماجی رابطے کی ویب سائٹ انسٹاگرام پر ہوئی اور پھر وہ محبت میں بدل گئی – جس کے بعد ماریہ پاکستان پہنچی اور اسلام قبول کرکے کاشف سے نکاح کرلیا-

نکاح کے موقع پر اپہنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے ماریہ نے کہا کہ میں پاکستان آ کر بہت خوش ہوں، مجھے کاشف بے حد پسند ہیں اور وہ مجھے بہت زیادہ خوش رکھتے ہیں۔شادی کے بعد امریکہ جانے سے متعلق سوال کے جواب میں ماریہ کا کہنا تھا کہ اس حوالے سے ہم نے تاحال کوئی فیصلہ نہیں کیا۔ جہاں کاشف رہیں گے میں بھی ان کے ساتھ وہیں وہوں گی پھر چاہے وہ پاکستان ہی کیوں نہ ہو۔

وزنامہ اوصاف نے ماریہ کے انسانی اسمگلر ہونے کا دعویٰ کیا ہے۔خبر کے مطابق ان دونوں کی شادی عارضی اور معاہدہ کے تحت ہوئی ہےسوشل میڈیا پرآگ کی طرح پھیلنے والی افواہوں کے مطابق در حقیقت امریکا سے تعلق رکھنے والی ماریا انسانی اسمگلنگ کا کاروبار کرنے والی ایک ایسی عورت ہے جو ایشیاء کے ممالک کے بہت سے نو جوانوں سے شادیاں کرچکی ہے اور اسے اس کام کے عوض بھاری رقم ملتی ہے کیوں کہ وہ شادی کرنے کے بعد اپنے شوہروں کوامریکا لے جا تی ہے جہاں پر چند ماہ کے بعد طلاق ہو جاتی ہے، پاکستان کے متعلقہ اداروں نے سیالکوٹ کے کاشف کی امریکا کی 41سالہ ماریا سے فراڈ شادی پر ان کے خلاف تحقیقات کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close