پاکستان

پی ٹی آئی کے وزیر نے بیٹے کو گرفتار کرنے والے پولیس اہلکاروں کی کیا خوفناک حالت کی ؟

لاہور : پی ٹی آئی کے وفاقی وزیر محمودالرشید کے بیٹے کو گرفتار کرنے والے پولیس اہلکاروں کو لینے کے دینے پڑ گئے اور نوکری سے بھی ہاتھ دھو بیٹھے-

پی ٹی آئی کے وفاقی وزیر ہائوسنگ کے بیٹے کو چند روز پہلے پولیس نے کار میں ایک برہنہ حالت لڑکی کے ساتھ قابل اعتراض حرکتیں کرتے ہوئے ناکے پر روکا تو انھوں نے پولیس اہلکاروں کی گندی گندی گالیاں دی اور بعد میں اغوا کرلیا-

جب یہ خبر میڈیا پر وائرل ہوئی تو وفاقی ادارے بھی حرکت میں آگئے اور واقعے کے تحقیقات شروع کردی، تحقیقات شروع ہونے کے کچھ ہی دیر بعد پی ٹی آئی وزیر نے ایک دبنگ کانفرس کی اور بڑے بڑے دعوے کیے لیکن ایسا کچھ نا ہوسکا اور بعد ازیں پولیس اہلکاروں کو ہی گرفتار کرلیاگیا-

گرفتار ہونے والے پولیس اہلکاروں میں ندیم اقبال، عثمان مشتاق اورعثمان سعید شامل ہیں اور ان کے خلاف مقدمہ گلبرگ تھانہ لاہور میں درج کیا گیا-

مقدمے میں یہ بھی درج کیا گیا ہے کہ ملزم اہلکار ان جوڑوں سے رقم لیتے اور انہیں تشدد کا نشانہ بناتے ہیں، ملزمان نے علی مصطفیٰ اور فضا جمیل پر بھی تشدد کیا اور 2 ہزار روپے چھین لیے. ملزمان اہلکاروں کے خلاف مقدمے میں یہ بھی درج کیا گیا ہے کہ ملزمان نے واردات کے بعد جوڑے کو اے ٹی ایم سے 50 ہزار روپے نکالنے کے لیے بھی کہا.

 

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close