پاکستان

ایکسائز آفس سے کروڑوں کی ضبط شدہ گاڑیاں غائب، جانئیے وہ کس کو تحفے میں دی گئی

اسلام آباد: ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن افسران سے لی گئیں کروڑں روپے کی گاٰڑیاں غائب ہوگئی جو موجودہ حکومت نے تحفے میں اپنے دوستوں کو تقسیم کی گئی-

اب تک کی تازہ ترین اطلاعات کے مطابق ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن آفس سے سیزر اینڈ ڈسپوزل رولز کے تحت ضبط کی گئی کروڑوں روپے مالیت کی گاڑیاں غائب ہوگئی- اور حیران کن خبر یہ کہ ضبط کی گئیں گاڑیاں ضلعی انتظامیہ میں تعینات افسران ، وزارت داخلہ کے عہدیداران اور دیگر اہم شخصیات کو بطور تحفہ دے دی گئیں جن پر سرکاری نمبر پلیٹ لگا کر انہیں ذاتی طور پر استعمال کیا جا رہا ہے۔

میڈیا رپورٹ میں بتایا گیا کہ گذشتہ ہفتے چیف کمشنر اسلام آباد عامر علی احمد نے اچانک ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن آفس اسلام آباد پر چھاپہ مارا اور ڈائریکٹر ایکسائز ، ای ٹی او اور دیگر حکام سے سیزر اینڈ ڈسپوزل رولز کے تحت گذشتہ ایک سال میں ضبط کی گئی گاڑیوں کا ریکارڈ طلب کیا ۔

جس پر چیف کمشنر کو بتایا گیا کہ گذشتہ ایک سال کے دوران سیزر رولز کے تحت کروڑوں روپے مالیت کی گاڑیاں قبضے میں لی گئی تھیں جس پر چیف کمشنر نے ای ٹی او ( نیو رجسٹریشن ) سے استفسار کیا کہ ان گاڑیوں کی ڈسپوزل کیا ہے؟ لیکن حکام کمشنر کو اس بات کا جواب نہ دے پائے-

چیف کمشنر نے حکام سے جواب طلب کرلیا اور اور انتظامیہ کو ہدایات جاری کی ہیں کہ ایس ایم ایس سسٹم متعارف کروایا جائے تاکہ صارفین کو گاڑیوں کی رجسٹریشن اور ڈسپوزل کے بارے میں بروقت آگاہ کیا جا سکے۔

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close