پاکستان

آسیہ بی بی کے وکیل سیف الملوک نے بڑا قدم اٹھالیا

توہین رسالت ﷺ کے جرم میں سزائے موت کی قیدی مسیحی خاتون آسیہ بی بی کے وکیل نے قتل کے ڈر سے پاکستان چھوڑ دیا-

یڈووکیٹ سیف الملوک نے سپریم کورٹ میں آسیہ بی بی کا کیس جارہانہ انداز میں لڑا اور انھوں نے فتح بھی حاصل کی- 31 اکتوبر کو سپریم کورٹ نے ایک بڑے قانون کا فیصلہ کرتے ہوئے حکم دیا کہ اگر آسیہ بی بی کسی اور کیس میں مطلوب نہیں ہیں تو انہیں رہا کر دیا جائے۔

عدالت کے فیصلہ سناتے ہے ملک بھر میں احتجاجی مظاہرے شروع ہوگئے اور ملک کے حالات انتہائی کشیدہ ہوگئے، احتجاجی دھرنوں میں فیصلے کرنے والے ججوں کے ساتھ ساتھ آسیہ مسیح کے وکیل کے خلاف بھی خوب نعرے بازی کی گئی-

ملک چھوڑنے سے پہلے آسیہ مسیح کے وکیل نے ایک فرانسسی ادارے کو انٹرویودیتے ہوئے کہا کہ ‘موجودہ صورتحال میں میرے لیے پاکستان میں رہنا ممکن نہیں ہے۔’

انہوں نے کہا کہ’میرے لیے ابھی زندہ رہنا ضروری ہے کیونکہ مجھے ابھی بھی آسیہ بی بی کے لیے قانونی جنگ لڑنی ہے۔’

ان کا مزید کہنا تھا کہ انصاف کے لیے جنگ جاری رہنی چاہیے ۔

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close