پاکستان

آسیہ بی بی کیس: جانیئے خواجہ سعد رفیق نے عمران خان کے متعلق کیا کہا ؟

اسلام آباد: اپوزیشن رہنماؤں نے آسیہ بی بی کیس کے متعلق فیصلے پر عمران خان کے جارہانہ بیان کو خوب آڑے ہاتھوں لیا اور پیپلز پارٹی کے رہنما خورشید شاہ سمیت ن لیگ کے رہنما خواجہ آصف کی سخت تنقید-

پاکستان کے سابق وزیرریلوے اور ن لیگ کے رہمما خواجہ سعد رفیق نے عمران خان کو خوب آڑے ہاتھوں لیا اور وزیراعظم عمران خان سے مطالبہ کیا کہ انہیں اسمبلی میں آکر پالیسی بیان دینا چاہیے۔

خواجہ سعد رفیق نے عمران خان کے بیان کو تنقید کا نشان بناتے ہوئے کہا کہ ‘حکمران کا رویہ جارحانہ نہیں ہونا چاہیے، وزیراعظم کو ایوان میں آکر اس صورت حال پر اعتماد میں لینا چاہیے تھا’۔

انھوں نے مزید کہا کہ ‘موجودہ صورتحال میں کوئی سیاسی فائدہ اٹھانا نہیں چاہتا، لیکن جس کارڈ کو ماضی میں استعمال کیا گیا، وہی اب آپ کے خلاف استعمال ہو رہا ہے’۔

سعد رفیق نے کہا کہ ‘آج پاکستان میں بحرانی کیفیت ہے، کچھ عناصر مذہب کا نام استعمال کرتے ہوئے پھر سڑکوں پر ہیں، لیکن ان کے بیانیے سےکوئی باشعور شہری اتفاق نہیں کرتا’۔

انہوں نے کہا کہ ‘آج جو کچھ ہو رہا ہے، وہ گزشتہ سے پیوستہ ہے، جس مذہبی کارڈ کو کل گزشتہ حکومت کے خلاف استعمال کیا گیا، وہ آج آپ کے خلاف ہو رہا ہے’۔

لیگی رہنما نے عمران خان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ‘کچھ عرصہ پہلے آپ لاک ڈاؤن کررہے تھے، آپ کو اس رویے پر ندامت ہونی چاہیے کہ آئندہ ایسا غیر دانش مندانہ رویہ استعمال نہیں کریں گے’۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ‘طاقت کے استعمال سے گریز کیا جانا چاہیے، وزیراعظم اس بات پر پالیسی بیان دیں اور افہام و تفہیم کے ذریعے اس مسئلے کا حل نکالیں’۔

لیگی رہنما کا مزید کہنا تھا کہ ‘جو کچھ قومی اداروں کے خلاف کہا گیا، وہ ناقابل قبول ہے، سپریم کورٹ کے فیصلے پر تنقید ہوتی ہے لیکن دھمکیوں کا کوئی مہذب معاشرہ اجازت نہیں دے سکتا’۔

 

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close