پاکستان

لاہور کے رجسٹرار کوآپریٹو آفس میں آگ لگی نہیں لگائی گئی، بڑا انکشاف

لاہور: پولیس رپورٹ میں ایک بڑا انکشاف ہوا ہے جس کے مطابق لاہور کے رجسٹرار کوآپریٹو آفس میں آگ لگی نہیں لگائی گئی تھی-

یاد رہے کی اسی سال لاہور کے آپریٹو سوسائٹیز کے رجسٹرار آفس میں اچانک آگ بھڑک اٹھی جس کے نتیجے میں تمام ریکارڈ اور فرنیچر جل گیا تھا-

آتشتزدگی کے اس واقعے پر بہت سے سوال اٹھائے گئے تھے اور چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے از خود نوٹس لیا تھا-

ذرائع کے مطابق فرانزک ایجنسی کو 270 فنگر پرنٹ بھیجے گئے تھے جس میں سے آئی ٹی ماہر حافظ رضا کے فنگر پرنٹ نے معاملہ حل کیا۔

ذرائع فرانزک ایجسنی نے بتایا کہ فرانزک ایجنسی کوبھیجی گئی ویڈیو میں آگ لگتے وقت کی ویڈیوغائب تھی اور آگ لگنے سے پہلے کمپیوٹر سے ہارڈ ڈسک بھی غائب کی گئیں۔

پولیس نے بھی اس متعلق ایک رپورٹ جمع کراوائی ہے جس میں انکشاف ہوا ہے کہ کوآپریٹو سوسائٹیز پنجاب کے رجسٹرار آفس میں آگ لگی نہیں بلکہ لگائی گئی تھی۔

پولیس کے مطابق آگ پیٹرول چھڑک کر لگائی گئی اور مزید تفتیش جاری ہے-

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close