پاکستان

ن لیگ کا ایک اور بڑا اعلان، بڑی خبر آگئی

لاہور: نواز شریف کی زیر صرارت اعلی سطح کا اجلاس بڑا فیصلہ سامنے آگیا-

پاکستان کے سابق وزیر اعظم کی زیرصدارت ایک اعلی سطح کا اجلا س ہوا جس میں اہم فیصلے کیے گئے-

ذرائع کے مطابق سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کے اجلاس میں شہبازشریف کی گرفتاری، وزیراعظم عمران خان کی گزشتہ روز کی پریس کانفرنس اور ضمنی انتخابات سے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا۔

ذرائع کے مطابق مسلم لیگ (ن) نے شہبازشریف کی گرفتاری پر پارلیمان میں بھرپور احتجاج کرنے کا فیصلہ کیا ہے جب کہ وزیراعظم کی پریس کانفرنس پر بھی پارلیمان میں بھرپور احتجاج ریکارڈ کرایا جائے گا۔

ذرائع نے بتایا کہ اجلاس میں بعض ارکان نے شہبازشریف کی گرفتاری کے رد عمل میں سڑکوں پر احتجاج کا مشورہ دیا اور بعض نے رائے دی کہ ملکی مفاد میں سڑکوں پر احتجاج نہ کیا جائے۔

رہنما رانا ثناء اللہ خان کا پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ شہباز شریف نے عوام کا ایک روپیہ یا ایک انچ سرکاری اراضی کسی کو منتقل نہیں کی۔

انہوں نے کہا کہ مفروضوں کی بنیاد اور بغیر کسی ثبوت کے اپوزیشن لیڈر کی گرفتاری پارلیمنٹ کی تضحیک کے مترادف ہے اور قائد حزب اختلاف کی گرفتاری جمہوریت پر حملہ اور پارلیمنٹ کی توہین ہے۔

رانا ثناء اللہ کا کہنا تھا کہ اجلاس میں فیصلہ ہوا ہے کہ قومی اسمبلی اور پنجاب اسمبلی کا اجلاس کل تک نہ بلایا گیا تو بدھ سے دونوں اسمبلیوں کے باہر اپوزیشن احتجاجاً اجلاس منعقد کرے گی اور اس انتقامی کارروائی سمیت موجودہ حکومت کی عوام دشمن کارروائیوں کے خلاف بھرپور احتجاج کیا جائے گا۔

ان کا کہنا ہے کہ ایک کرپٹ ٹھیکیدار سے انکوائری رپورٹ کے بعد ٹھیکے کو منسوخ کیا گیا جب کہ شہباز شریف کی گرفتاری انتقامی کارروائی اور ضمی الیکشن پر اثر انداز ہونے کی کوشش ہے جس میں اس کارروائی کی بھرپور مذمت کی گئی۔

ان کا کہنا ہے کہ اجلاس میں مختلف کمیٹیاں تشکیل دی گئیں ہیں جو کہ پارٹی اور موجودہ سیاسی صورتحال سے متعلق ہے جب کہ ایک کمیٹی اپوزیشن پارٹیوں سے رابطہ کرے گی جو مشترکہ لائحہ عمل طے کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ ’عمران نیازی سن لے، اس پارلیمانی احتجاج کو وزن نہ دیا گیا تو یہ احتجاج پارلیمنٹ تک محدود نہیں رہے گا‘۔

 

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close