کالم

ملالہ یوسف زئی کون ہے

ملالہ یوسف زئی کون ہے آئیے اک نظر ڈالتے ہیں

ملالہ در حقیقت ہے کون اور اس کی سچائی کیا ہے آئیے اک نظر ڈالیں-

یہ تو ہم سب کو معلوم ہوگا کہ ملالہ جس نے اپنی ابتدائی تعلیم کا آغاز سوات سے کیا اور اس وقت سوات کے حالات ابتہائی کشیدہ تھے، اک روز سکول سے واپس آتے ہوئے ملالہ کو طالبان نے نشانہ بنایا اور فائرز ان کے ساتھ بیٹھی دو طالبات کو بھی لگے, مقامی لوگوں نے انہیں ہسپتال منتقل کر دیا-

بعد ازیں یہ خبر ہر میڈیا چینل کی زینت بن گئی اور ملالہ کو آرمی ہسپتال یعنی CMH پشاور میں داخل کیا گیا اور انکا علاج شروع کیا گیا-

وقت گزرنے کے ساتھ ہر طرف ملالہ ملالہ ہوگئی اور ان کو اعلی علاج کے لیے انگلینڈ منتقل کردیا گیا جہاں وہ مکمل طور پر صحت یاب ہو گئی-

ملالہ کے صحت یاب ہونے کے بعد انہیں طرح طرح کے میڈلز اور ایورڈاز سے نوازا گیا اور انہیں ہر طرح کی وی آئی پی سہولت دی گئی، ان کا علاج لندن کے مہنگے ترین اسپتال میں ہوا اور ان کو قوم کی بچی قرار دیا گیا ان کے لیے اسکول، کالجز، یونی ورسٹیز ہتہ کہ ہر جگہ دعائیہ تقریب کا اہتمام کیا گیا اور یہاں تک کہ ملالہ ڈے بھی منایا گیا-

مکمل طور پر صحت یاب ہوجانے کے بعد اب تک ملالہ یوسف زئی یعنی نام نہاد قوم کی بیٹی نے کبھی پاکستان آنے کی زحمت نہیں کی بلکہ وہ وطن جس نے ملالہ کو اتنی عزت دی یہاں تک لے کر آیا ملالہ نے کبھی اس ملک کا نہیں سوچا-

ملالہ جس نے تعلیم کی شمع روشن کی تو کیا اب وہ شمع بجھ چکی ہے ؟؟ کیا ملالہ صرف مشہور ہونا چائتی تھی ؟ کیا ملالہ کا سفر صرف یہں تک تھا ؟ ایسے بہت سے سوالات ہم سب کے ذہنوں میں پیدا ہوتے ہیں جن کا جواب کسی کے پاس نہیں-

ملالہ کے والد ضیا الدین کا وہ بیان بھی ابھی تک کسی کو نہیں بھولا ہوگا جب انھوں نے اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ پاکستان کو ہرصورت شکیل آفریدی کو ریا کرنا ہوگا انہوں نے اپنے بیان میں مزید کہا تھا کہ امریکہ پاکستان میں ڈرون حملے کرے اور عافیہ صدیقی ایک دہشت گرد ہے ان کی رہائی نا ممکن ہے-

ملالہ کے والد نے انتہائی بے شرمی سے یہ الفاظ تو کہہ دیے لیکن کیا عافیہ صدیقی اس قوم کی بیٹی نہیں ہے ؟ کیا سب سہولیات صرف ملالہ کے لیے ہیں ؟

ملالہ کے ساتھ بیٹھی دو اور طالبات بھی تو شدید ذخمی ہوئی تھی لیکن کبھی کہیں ان کا نام نے آیا ، یہاں تک کے آرمی پبلک اسکول حملے میں سینکڑوں کے تعداد میں بچے شہید اور سینکڑوں شدید زخمی ہوگئے تھے ان کا بھی کبھی کہیں نام آیا ؟

کیا ملالہ یوسف زئی قوم کی بیٹی یے یا اسفند نامی وہ معصوم بچہ جس نے اسکول کو دہشت گردانہ حملے سے بچانے کے لیے اپنی جان کا نظرانہ پیش کیا تھا ؟ فیصلہ آپکو کرنا ہے

 

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close