پاکستان

شہباز شریف کی گرفتاری اپوزیشن کی طرف سے شدید رد عمل

لاہور: گزشتہ روز نیب کی طرف سے ایک بڑی گرفتاری کے بعد ایک بڑی ملاقات سامنے آئی ہے-

مسلم لیگ (ن) کے چیئرمین راجہ ظفر الحق، سابق اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق، مرتضیٰ جاوید عباسی، رانا تنویر حسین اور جے یو آئی (ف) کے مولانا عبدالغفور حیدری اسلام آباد میں اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کی رہائش گاہ پہنچے اور انہیں اسمبلی کا اجلاس بلانے کے لیے ریکوزیشن جمع کرائی۔

مسلم لیگ کی طرف سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ شہباز شریف کی گرفتاری پر ایوان میں بحث کی جائے-

اسپیکر سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ظفر الحق

اس موقع پر سردار ایاز صادق کا کہنا تھا کہ لیڈر آف اپوزیشن کو بلایا صاف پانی کیس میں اور گرفتار آشیانہ کیس میں کیا گیا، مسلم لیگ (ن) اور اس کی قیادت کے خلاف انتقامی کارروائی ہورہی ہے۔

نے کہا کہ شہبازشریف کو بلاوجہ گرفتار کیا گیا، ان کی گرفتاری انتقامی کارروائی ہے۔

انہوں نے کہا کہ شہبازشریف کی گرفتاری سے استحقاق مجروح ہوا، حکومتی ارکان کے بیانات سے واضح ہے کہ بدترین انتقامی کارروائی کی جارہی ہے، جب بھی الیکشن یا ضمنی الیکشن آتا ہے مسلم لیگ (ن) کی قیادت گرفتار ہوتی ہے، الیکشن پر اثرانداز ہونےکی کوشش کی جارہی ہے۔

سابق اسپیکر کا کہنا تھا کہ خواجہ سعد رفیق ضمنی الیکشن لڑنےجارہے ہیں اور کل ان کا نام ای سی ایل میں ڈال دیاگیا۔

 

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close