پاکستان

سابق وزیراعلی پنجاب کیس سے متعلق بڑی خبر سامنے آگئی

لاہور : مسلم لیگ ن کے صدر اور خادم اعلی پینجاب کو سخت سکیورٹی میں عدالت پیش کر دیا گیا-

گزشتہ روز دھوکے سے گرفتار کیے گئے خادم اعلی پنجاب کو نیب نے سخت سکیورٹی میں احتساب عدالت پیش کر دیا اور عدالت سے درخواست کی ہے کہ ملزم کا جسمانی ریمانڈ دیا جائے-

عدالت میں ن لیگی ارکان کی ایک بڑی تعداد جمع ہوگئی تو احتساب عدالت کے جج جج نجم الحسن نے شہباز شریف اور وکلاء کو اپنے چیمبر میں بلالیا اور وہاں سماعت شروع کی۔

اس موقع پر پراسیکیوٹر نیب نے موقف اختیار کیا کہ شہباز شریف نے اختیارات سے تجاوز کیا اور آشیانہ اقبال ہاؤسنگ اسکیم کا کنٹریکٹ لطیف اینڈ سنز سے منسوخ کرکے کاسا ڈویلپرز کو دیا، اُن کے اس غیر قانونی اقدام سے قومی خزانے کو کروڑوں روپےکا نقصان ہوا۔

پراسیکیوٹر نے مزید کہا کہ شہباز شریف سے مزید تفتیش درکار ہے، لہذا عدالت شہباز شریف کو جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کرے۔

اس موقع پر شہباز شریف کے وکیل مجد پرویز اور اعظم نذیر تارڑ نے کہا ان کے موکل پر تمام مقدمات جھوٹے اور بےبنیاد ہیں-

موقع دیکھ کر شہباز شریف نے بھی مطالبہ کیا کہ میں سماعت کھلی عدالت میں چاہتا ہوں جو عدالت نے قبول کرلیا-

 

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close