انٹر نیشنل

بھارت میں 70 ہزار کسانوں کے احتجاج نے مودی حکومت کے درو دیوار ہلا دیے

پاکستان پے انگلیاں اٹھانے والی بھارت سرکار بڑی مشکل میں پھنس گئی، کسانوں کی ایک بڑی تعداد نے ٹریکٹر اور تھریشر کے ساتھ دھاوا بول دیا-

بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست اتر پردیش کے ضلع غازی آباد میں 70 ہزار سے زائد غریب کسان حکومتی پالیسیوں کے خلاف سڑکوں پر نکل آئے۔ کسان ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بینرز اُٹھائے ٹریکٹروں، ٹرالر اور ٹرکوں پر سوار نئی دہلی کی جانب مارچ کر رہے ہیں-

بھارتی سکیورٹی فورسسز کی طرف سے مظاہرین پر آنسو گیس کی شیلنگ اور واٹر کینن کیا گیا-

دوسری جانب اترپردیش کے وزیراعلیٰ نے بی جے پی کی حکومت کو کسانوں کا مسیحا بناکر پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ نریندرا مودی نے کسانوں کے تمام مسائل کو حل کردیا ہے اور 1947 کے بعد یہ پہلا موقع ہے جب کسان اور حکومت ہم نوالہ و ہم پیالہ ہیں۔ یہ سب بی جے پی کی ساڑھے 4 سالہ دورِ اقتدار کے باعث ممکن ہودوسری جانب اترپردیش کے وزیراعلیٰ نے بی جے پی کی حکومت کو کسانوں کا مسیحا بناکر پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ نریندرا مودی نے کسانوں کے تمام مسائل کو حل کردیا ہے اور 1947 کے بعد یہ پہلا موقع ہے جب کسان اور حکومت ہم نوالہ و ہم پیالہ ہیں۔ یہ سب بی جے پی کی ساڑھے 4 سالہ دورِ اقتدار کے باعث ممکن ہوا-

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close