انٹر نیشنل

اب سے بھارت میں اچھی بہو بننے کیلئے بھی تعلیم حاصل کرناہوگی

بھوپال: اب سے بھارتی نصاب میں ’آدرش بہو‘ نامی مضمون کا اضافہ

ٹائمز آف انڈیا کی ایک رپورٹ کی خبر نے تحلقہ مچادیا کہ اب سے بھارت میں ’آدرش بہو‘ نامی سرٹفیکیٹ متعارف کروایا ہے جو کہ جسے بھارتی شہر بھوپال کی برکت اللہ یونیورسٹی نے متعارف کروایا ہے-

اس یونیورسٹی کے چانسلر نے اپنے بیان میں کہا کہ اس سے لڑکیوں کو آگاہی ملے گی کہ انہیں شادی کے بعد کیسے ایک نئے ماحول کا عادی ہونا ہے‘۔

اور بھارت کے ایک مشہور پروفیسر گپتا نے کہا کہ ‘اس میں نفسیات اور عمرانیات کے عنوانات پڑھائے جائیں گے، جس کے تحت لڑکیاں سسرال والوں کے مزاج کو سمجھ سکیں گی، یہ ہماری ایک کوشش ہے جو معاشرے میں ایک مثبت تبدیلی لائے گی‘۔

بھارت میں اس پر شدید تنقید بھی ہو رہی ہے ایک ریٹائرڈ پروفیسر ایچ ایس یادو نے آدرش بہو کورس پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ’یہ ایک مزاحیہ تجویز ہے، برکت اللہ یونیورسٹی بھلے اس منصوبے کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کی کوشش کرے لیکن اس سے بھی زیادہ ضرورت یہ ہے کہ یونیورسٹی کے امتحانات، کلاسز اور انفراسٹکچر پر توجہ دی بجائے’۔

Show More

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close
Close